عنوان: "اللہ کے فضل" سے کیا مراد ہے؟(102430-No)

سوال: مفتی صاحب ! الله کا فضل سے کیا مراد ہے؟ اور اس میں کیا کیا آتا ہے؟

جواب: "فضل اور رحمة" کی تفسیر سے متعلق صحابہ کرام، تابعین اور علماء امت کے مختلف اقوال ہیں:
بعض علماء نے کہا کہ اللہ کے فضل و رحمت سے مراد قرآن کا نزول ہی ہے۔ مجاہد اور قتادہ کا قول ہے : اللہ کا فضل ایمان ہے اور اللہ کی رحمت قرآن۔ حضرت ابو سعید خدری نے فرمایا : اللہ کا فضل ایمان ہے اور اللہ کی رحمت یہ ہے کہ اللہ نے ہم کو اہل قرآن بنایا۔
ابو الشیخ وغیرہ نے حضرت انس کی روایت سے بیان کیا کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : ان کو خوش ہونا چاہئے اللہ کے فضل سے یعنی قرآن سے اور اللہ کی رحمت سے ‘ یعنی اس بات سے کہ اللہ نے ان کو اہل قرآن میں سے بنایا۔
حضرت ابن عمر نے فرمایا : اللہ کا فضل اسلام ہے اور اللہ کی رحمت یہ ہے کہ اللہ نے اسلام کو ہمارے دلوں میں محبوب بنا دیا۔
حضرت خالد بن معدان نے فرمایا : اللہ کا فضل اسلام ہے اور اللہ کی رحمت رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی سنت، یہ بھی کہا گیا ہے کہ اللہ کا فضل ایمان ہے اور اللہ کی رحمت سنت،
ھو خیر مما یجمعون۔ وہ (یعنی قرآن کا نزول یا اللہ کا فضل و رحمت) اس (دنیوی متاع حقیر) سے بہتر ہے، جس کو وہ جمع کر رہے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی تفسیر البغوی:

قوله تعالى: قل بفضل الله وبرحمته، قال مجاهد وقتادة: فضل الله: الإيمان، ورحمته: القرآن.
وقال أبو سعيد الخدري: فضل الله القرآن ورحمته أن جعلنا من أهله. وقال ابن عمر: فضل الله:
الإسلام، ورحمته: تزيينه في القلب. وقال خالد بن معدان: فضل الله: الإسلام، ورحمته: السنن.
وقيل: فضل الله: الإيمان، ورحمته: الجنة. فبذلك فليفرحوا، أي: ليفرح المؤمنون أن جعلهم الله من أهله، هو خير مما يجمعون، أي: [خير] مما يجمعه الكفار من الأموال.

(ج: 2، ص: 423، ط: دار احیاء التراث العربی)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 666

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Interpretation of Quranic Ayaat

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com