عنوان: اللہ تعالیٰ کی طرف سے آزمائش اور عذاب میں کیا فرق ہے؟ (105282-No)

سوال: اگر کسی مسلمان کو کوئی تکلیف پہنچتی ہے، تو یہ کیسے پتہ چلے گا کہ یہ اس بندے کے لیے اللہ تعالٰی کی طرف سے آزمائش ہے یا اللہ تعالیٰ کا عذاب ہے؟

جواب: واضح رہے کہ اللہ تعالیٰ جو تکالیف اور مصائب اپنے نیک بندوں کو دیتا ہے، وہ تکالیف اور مصائب ان کے لیے آزمائش اور رفع درجات کا سبب ہوتے ہیں، اور جو تکالیف اور مصائب اللہ تعالیٰ اپنے گناہ گار بندوں کو دیتا ہے، وہ تکالیف اور مصائب ان کے اعمالِ بد کا نتیجہ اور عذاب ہوتے ہیں۔

آزمائش اور عذاب میں ایک فرق یہ بھی ہے کہ جس تکلیف میں اللہ تعالیٰ کا تعلق مزید بڑھ جائے، اور دلی طور پر سکون واطمینان کی کیفیت ہو، تو یہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے آزمائش ہے، اور جس تکلیف میں اللہ تعالیٰ کے تعلق میں مزید کمی واقع ہوجائے، اور بے سکونی اور جزع فزع کی کیفیت ہو، تو یہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے عذاب کی ایک شکل ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

قال اللہ تبارک وتعالیٰ:

ومااصابکم من مصیبۃ فبماکسبت ایدیکم ویعفواعن کثیر۔الآیۃ۔

( سورۃ الشوریٰ آیت نمبر:30)

وفی تفسیر المظہری:

قال البیضاوی:الآیۃ مخصوصۃ بالمجرمین فان ما اصاب غیرھم فلاسباب اخر منھا تعریضہ للاجر العظیم بالصبر علیہ۔

(تفسیر مظہری ج:8ص:326)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 305

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.