عنوان: قیامت والے دن انسان کو کس نام سے پکارا جائے گا؟(105813-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب ! قیامت والے دن انسان کو والد کے نام سے پکارا جائے گا یا والدہ کے نام سے؟

جواب: واضح رہے کہ عوام میں یہ بات مشہور ہے کہ لوگ قیامت کے دن اپنی ماؤں کے نام سے پکارے جائیں گے، لیکن یہ بات نہ ہی قرآن کریم میں وارد ہوئی ہے، نہ ہی کسی قابل اعتماد حدیث میں، بلکہ اس کے برعکس صحیح احادیث میں وارد ہے کہ لوگ قیامت کے دن اپنے باپ کی نسبت سے پکارے جائیں گے۔

جیسا کہ امام بخاری نے اپنی کتاب صحیح بخاری کے اندر ایک عنوان قائم کیا ہے:
"باب ما یدعی الناس بابائھم"
اور اس میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد نقل کیا ہے:

عن ابن عمر رضی اللہ عنہ عن النبی ﷺ قال: "ان الغادر یرفع لہ لواء یوم القیامۃ یقال ہذہ غدرۃ فلان ابن فلان"

(صحیح بخاری، ج2، ص912)

ترجمہ: بیشک بدعہدی کرنے والا، اس کے لیے بلند کیا جائے گا جھنڈا قیامت کے دن، اور کہا جائے گا کہ یہ فلاں بن فلاں کی بدعہدی کا نشان ہے۔

مشکوٰۃ شریف کی ایک روایت میں ہے:

وعن ابی درداء رضی اللہ عنہ قال: قال رسول للہ ﷺ: تدعون یوم القیامۃ باسمائکم واسماء ابائکم فاحسنوا اسمائکم.

( مشکوہ المصابیح، ص 408)

ترجمہ:
حضرت ابودرداء رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے منقول ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: قیامت کے دن تم کو تمہارے اور تمہارے باپ کے ناموں سے پکارا جائے گا، لہذا تم اپنے اچھے نام رکھو۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الحدیث النبوی:

عن ابن عمر رضی اللہ عنہ عن النبی ﷺ قال: "ان الغادر یرفع لہ لواء یوم القیامۃ یقال ہذہ غدرۃ فلان ابن فلان"

(صحیح بخاری، ج2، ص912، باب ما یدعی الناس بابائھم، ط: دار السلام، بیروت)

وفی عمدہ القاری:

قال الحافظ العینی رحمہ اللہ تعالی : قال ابن البطال الدعاء بالاباء اشد فی التعریف وابلغ فی التمییز(وبعد اسطر)وفی حدیث الباب رد لقول من یزعم انہ لا یدعی الناس یوم القیامۃ الا بامھاتھم لان فی ذالک سترا علی آبائھم وفیہ جواز الحکم بظاھر الامور.

(عمدۃالقاری، ج22، ص201)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 392
qayamat wale / waley din insan / insaan ko kis naam se / sey pukara / pokaara jai / jaye ga?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.