عنوان: کیا غسل کرنے سے وضو بھی ہوجاتا ہے؟ (107589-No)

سوال: مفتی صاحب ! میرا سوال یہ ہے کہ اگر کسی نے غسل سے پہلے وضو نہیں کیا، تو صرف غسل کرنے سے اس کا وضو ہو جائے گا یا نہیں؟

جواب: واضح رہے کہ غسل کا مسنون طریقہ یہ ہے کہ غسل کے شروع میں پہلے باقاعدہ وضو کرلیا جائے، البتہ اگر کسی نے غسل سے پہلے وضو نہیں کیا، تو غسل کرنے سے وضو بھی ہوجائے گا، کیونکہ غسل میں پورے جسم کے ساتھ اعضائے وضو بھی دھل جاتے ہیں، لہٰذا غسل کے بعد مستقل وضو کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


لما فی سنن الترمذی:

حدثنا إسماعيل بن موسى، قال: حدثنا شريك، عن أبي إسحاق، عن الأسود، عن عائشة، أن النبي صلى الله عليه وسلم كان لا يتوضأ بعد الغسل.
هذا حديث حسن صحيح.
وهذا قول غير واحد من أصحاب النبي صلى الله عليه وسلم، والتابعين: أن لا يتوضأ بعد الغسل.

(حدیث نمبر: ۱۰۷، ج:۱ ، ص:۱۶۸، ط: دارالغرب الإسلامی)

وفی مرقاۃ المصابیح لملاعلی القاری:

(وعن عائشة قالت: «كان النبي صلى الله عليه وسلم لا يتوضأ بعد الغسل» ) : أي: اكتفاء بوضوئه الأول في الغسل، وهو سنة، أو باندراج ارتفاع الحدث الأصغر تحت ارتفاع الأكبر ; بإيصال الماء إلى جميع أعضائه، وهو رخصة۔

(ج: ۲، ص: ۴۳۰، ط: دارالفکر)

کذا فی فتاوی دارالعلوم دیوبند:

(فتوی نمبر:۴۷۹۷۴)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 399
kia ghusal karne say bhi wozu hojata hai?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Purity & Impurity

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.