عنوان: کیا پاخانہ کے راستہ میں بد فعلی کرنے سے فاعل اور مفعول دونوں پر غسل واجب ہوگا؟(107775-No)

سوال: کیا پیچھے کے راستہ میں بد فعلی کرنے سے فاعل اور مفعول دونوں پر غسل واجب ہوگا یا صرف فاعل پر واجب ہوگا؟

جواب: شریعتِ مطہرہ میں دبر (پاخانہ کے راستہ) میں جماع کرنا حرام ہے، اور اس پر قرآن و حدیث میں سخت وعیدیں بھی آئی ہیں، لہذا اس قبیح فعل سے توبہ و استغفار کرنا لازم ہے، تاہم اگر یہ برا فعل سرزد ہوجائے، تو فاعل اور مفعول دونوں پر غسل کرنا واجب ہوگا، چاہے منی نکلے یا نہ نکلے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الشامیۃ:

( فی أحد سبیلی آدمی ) حی ( یجامع مثلہ ) سیجیٔ محترزہ ( علیھما) أی الفاعل والمفعول (لو) کانا ( مکلفین ) ولو أحد ھما مکلفا فعلیہ فقط دون المراھق۔

(ج: 1، ص: 162، ط: دار الفکر)

وفی الولوالجیۃ:

الایلاج فی الآدمی یوجب الغسل علی الفاعل والمفعول انزل اولم ینزل لانہ ایلاج فی الفرج۔

(ج: 1، ص: 50)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 38

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Purity & Impurity

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com