عنوان: جزیرہ عرب میں غیر مسلموں کی عبادت گاہ کی تعمیر کا حکم(101398-No)

سوال: مفتی صاحب ! ایک عرب ملک ہندو گرجا گھر کی تعمیر کر رہا ہے، کیا صحابہ کے دور میں سر زمین عرب تمام شرک، کفار اور مشرکین سے پاک کرایا گیا تھا؟

جواب: عن مالك عن ابن شهاب أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال لا يجتمع دينان في جزيرة العرب۔
جناب رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: کہ جزیرہ عرب میں دو دین ( اسلام اورکفر ) اکٹھے نہیں ہوسکتے۔
لہذا جزیرہ عرب میں نہ ہی غیر مسلموں کی عبادت گاہیں باقی رکھی جائیں گی اور نہ ہی ان کو مستقل وطن بناکر رہنے کی اجازت دی جائیگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

بدائع الصنائع: (114/7)

(وَأَمَّا) أَرْضُ الْعَرَبِ فَلَا يُتْرَكُ فِيهَا كَنِيسَةٌ، وَلَا بِيعَةٌ وَلَا يُبَاعُ فِيهَا الْخَمْرُ وَالْخِنْزِيرُ مِصْرًا كَانَ أَوْ قَرْيَةً، أَوْ مَاءً مِنْ مِيَاهِ الْعَرَبِ، وَيُمْنَعُ الْمُشْرِكُونَ أَنْ يَتَّخِذُوا أَرْضَ الْعَرَبِ مَسْكَنًا وَوَطَنًا كَذَا ذَكَرَهُ مُحَمَّدٌ تَفْضِيلًا لِأَرْضِ الْعَرَبِ عَلَى غَيْرِهَا، وَتَطْهِيرًا لَهَا عَنْ الدِّينِ الْبَاطِلِ قَالَ - عَلَيْهِ الصَّلَاةُ وَالسَّلَامُ -: «لَا يَجْتَمِعُ دِينَانِ فِي جَزِيرَةِ الْعَرَبِ».

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 638
jazeerah arab mai ghair muslimon ki ibadat gaah ki tameer, Order to build a place of worship for non-Muslims in the Arabian Peninsula

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Miscellaneous

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.