عنوان: موبائل سے کھینچی گئی ڈیجیٹل تصویر کا حکم(2359-No)

سوال: حضرت، پوچھنا یہ تھا کہ آپ نے بچوں کو تصویر والے کپڑے پہیننے کے بارے میں بتایا تھا کہ ایسا کرنا حرام ہے۔
اب پوچھنا یہ ہے کہ جیسا کے آپکو معلوم ہے، موبائل کیمرہ ہر وقت، ہر جگہ اور ہر کسی کے پاس موجود ہوتا ہے تو لوگ بچے کی بھی تصویر کھینچتے ہیں تو مجھے اکثر لوگ اِس بات پر تنقید کرتی ہیں کہ آپ تصویر والے کپڑے تو نہیں پہناتے، لیکن تصویر کھینچنےسے کیسے بچ سکتے ہیں تو کیا موبائل سے بچوں کی تصویر کھینچنا بھی حرام میں آتا ہے ؟

جواب: سابقہ فتویٰ میں جو تصویر والے کپڑے سے منع کیا تھا، اس کی وجہ یہ تھی کہ کپڑوں میں پرنٹڈ (Printed) اور مستقل تصویر ہوتی ہے، جو تمام علماء کے نزدیک بالاتفاق حرام ہے، البتہ ڈیجیٹل تصویر سے متعلق بہت سے علماء اس بات پر متفق ہیں کہ ڈیجیٹل تصویر مستقل کوئی تصویر نہیں ہوتی، بلکہ شعاعوں کو جمع کرکے تصویر بنی ہوتی ہے، ان علماء کے نزدیک یہ تصویر نہیں، بلکہ عکس ہوتا ہے، جس کو سامنے بھی لایا جاسکتا ہے اور مٹایا بھی جاسکتا ہے، اس لیے ڈیجیٹل تصویر اصل تصویر کے حکم میں نہیں ہے، لھذا اگر کوئی کھینچ لے تو اس کی گنجائش ہے، البتہ ان علماء کے نزدیک بھی بلا ضرورت ڈیجیٹل تصویر سے بچنا بہتر ہے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

صحیح البخاری: (باب ما وطئ من التصاویر، رقم الحدیث: 5954، 75/4، ط: دار الکتب العلمیہ)
حدثنا علي بن عبد الله، حدثنا سفيان، قال: سمعت عبد الرحمن بن القاسم، وما بالمدينة يومئذ أفضل منه، قال: سمعت أبي، قال: سمعت عائشة رضي الله عنها: قدم رسول الله ﷺ من سفر، وقد سترتُ بقرام لي على سهوة لي فيها تماثيل، فلما رآه رسول الله ﷺ هتكه وقال: «أشد الناس عذابا يوم القيامة الذين يضاهون بخلق الله» قالت: فجعلناه وسادة أو وسادتين.

و فیہ ایضاً: (كتاب اللباس، باب عذاب المصورين، رقم الحدیث: 5950)
عن عبد الله، قال: سمعت النبي صلى الله عليه وسلم يقول: «إن أشد الناس عذاباً عند الله يوم القيامة المصورون»".

رد المحتار: (كتاب الصلاة، مطلب مكروهات الصلاة، 647/1، ط: دار الفکر)
"قال في البحر: وفي الخلاصة: وتكره التصاوير على الثوب صلى فيه أو لا، انتهى. وهذه الكراهة تحريمية. وظاهر كلام النووي في شرح مسلم: الإجماع على تحريم تصوير الحيوان، وقال: وسواء صنعه لما يمتهن أو لغيره، فصنعته حرام بكل حال؛ لأن فيه مضاهاةً لخلق الله تعالى، وسواء كان في ثوب أو بساط أو درهم وإناء وحائط وغيرها اه".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 520 Oct 30, 2019
mobile se khenchi gai digital tasveer ka hokom / hokum, Ruling / Order of digital photo taken from mobile

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Prohibited & Lawful Things

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.