عنوان: کس قسم کا لباس پہننا چاہیے؟(103853-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! لباس کے بارے میں دریافت کرنا تھا کہ مسلمانوں کو کس قسم کا لباس پہننا چاہیے؟ ذرا تفصیل سے آگاہ فرمادیں۔

جواب: واضح رہے کہ لباس جس قسم کا بھی پہنا جائے، جائز ہے، بشرطیکہ اس میں درج ذیل امور سے احتراز کیا جائے۔
1)۔اس میں اسراف اور تبذیر نہ ہو ۔
2)۔فخر وتکبر اور دکھلاوا مقصود نہ ہو۔
3)۔اس میں کافروں اور فاسقوں کی مشابہت اختیار نہ کی گئی ہو۔
4)۔مردوں کا لباس عورتوں کے، اور عورتوں کا لباس مردوں کے مشابہ نہ ہو۔
5)۔لباس اتنا تنگ اور باریک نہ ہو کہ اس سے بدن یا بدن کی بناوٹ نمایاں ہوتی ہو۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی تکملۃ فتح الملہم:
وأما ما یقصد بہ الخیلاء والکبر أو الأشر والبطر أو الریاء فہو حرام۔(ج:4ص:88کتاب اللباس)

وفیہ ایضاً:
فمن مقدمۃ ہٰذہ المبادي: أن اللباس یجب أن یکون ساترًا لعورۃ الإنسان …، فکل لباس ینکشف معہ جزء من عورۃ الرجل والمرأۃ، لا تقرہ الشریعۃ الإسلامیۃ …، وکذلک اللباس الرقیق أو اللاصق بالجسم الذي یحکي الناظر شکل حصۃ من الجسم الذي یجب سترہ، فہو في حکم ما سبق في الحرمۃ، وعدم الجواز، … والمبداء الثالث: أن اللباس الذي یتشبہ بہ الإنسان بأقوام کفرۃ لا یجوز لبسہ لمسلم إذا قصد بذلک التشبہ بہم۔ (تکملۃ فتح الملہم / أول کتاب اللباس والزینۃ ۴؍۸۸)


واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

(مزید سوالات و جوابات کیلئے ملاحظہ فرمائیں)
http://AlikhlasOnline.com

معاشرت (اخلاق وآداب ) میں مزید فتاوی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Characters & Morals

02 Apr 2020
جمعرات 02 اپریل - 8 شعبان 1441

Copyright © AlIkhalsonline 2020. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com