عنوان: والدین کی طرف سے صدقہ فطر ادا کرنا(104379-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب ! کیا والدین کی طرف سے بھی صدقہ فطر ادا کیا جا سکتا ہے؟

جواب: واضح رہے کے شرعا والدین کی طرف سے صدقہ فطر ادا کرنا لازم نہیں ہے، البتہ اگر اپنی خوشی سے ان کی طرف سے ادا کرنا چاہے، تو ادا کرسکتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی مراقی الفلاح:

تجب علی حر مسلم مکلف مالک لنصاب أو قیمتہ … فیخرجہا عن نفسہ و أولادہ الصغار الفقراء، وإن کانوا أغنیاء یخرجہا من مالہم۔

(مراقي الفلاح علی حاشیۃ الطحطاوي، کتاب الزکاۃ، باب صدقۃ الفطر، دار الکتاب دیوبند ص:۷۲۳)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 234
walden / vaalden ki taraf se /sey sadqa fitr / sadqatul fitar ada / adaa karnaa / karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sadqa-tul-Fitr (Eid Charity)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com