عنوان: سعودی عرب میں مقیم شخص کیلئے اپنا صدقہ فطر پاکستان میں ادا کرنے کا حکم ؟ (104404-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب ! میں سعودی عرب میں ہوں، تو کیا میری طرف سے پاکستان میں صدقہ فطر ادا کیا جا سکتا ہے؟

جواب: صدقہ فطر کی مقدار (گندم کے اعتبار سے) پونے دو کلو گندم ہے، چاہے جہاں بھی ادا کیا جائے، اگر قیمت ادا کرنی ہو تو جہاں ادائیگی کرنے والا موجود ہو، وہاں کی قیمت کا اعتبار ہوگا، لہذا مذکورہ صورت میں اگر آپ عید الفطر سعودی عرب میں کریں، تو آپ پر اپنا اور اپنے نابالغ بچوں کا صدقہ فطر سعودی عرب کی قیمت کے مطابق ادا کرنا لازم ہے، خواہ وہ رقم آپ سعودیہ میں ادا کریں یا پاکستان میں کوئی آپ کی اجازت سے ادا کرے۔
جہاں تک آپ کی اہلیہ اور بالغ بچوں کا تعلق ہے، تو وہ اگر پاکستان میں ہیں تو ان پر اپنا صدقہ فطر اپنے مقام یعنی پاکستان کے حساب سے ادا کرنا لازم ہے، تاہم اگر آپ ان کی طرف سے ادا کرنا چاہتے ہوں، تو ایسی قیمت لگانا بہتر ہے، جس میں فقراء کا زیادہ فائدہ ہو۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

لما فی الدرالمختار مع الشامي:
وفي الفطر مکان المؤدي عند محمد وہو الأصح۔
بل صرح في العنایۃ والنہایۃ بأنہ ظاہر الروایۃ کما في الشرنبلالیۃ، وہو المذہب کما في البحر، فکان أولیٰ مما في الفتح من تصحیح قولہما باعتبار مکان المؤدي عنہ۔ قال الرحمتي: وقال في المنح: في أخر باب صدقۃ الفطر: الأفضل أن یؤدی عن عبیدہ وأولادہ وحشمۃ حیث ہم عند أبي یوسف وعلیہ الفتویٰ، وعند محمد حیث ہو، تأمل۔ قلت: لکن في التاتارخانیۃ: یؤدی عنہم حیث ہو، وعلیہ الفتویٰ وہو قول محمد، ومثلہ قول أبي حنیفۃ، وہو الصحیح۔
(ا ۳؍۳۰۷ زکریا)

وفی الفتاویٰ الہندیۃ:
ویکرہ نقل الزکاۃ من بلد إلیٰ بلد … إلی أن ینقلہا الإنسان إلی قرابتہ أو إلی قوم ہم أحوج من أہل بلدہ لما فیہ من الصلۃ أو زیادۃ دفع الحاجۃ۔
( ۱؍۱۹۰ کوئٹہ)


واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 1093
saudi arab mai muqeem shakhs k / kay liye apna sadqa fitar pakistan mai ada karne ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sadqa-tul-Fitr (Eid Charity)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com