عنوان: گھر میں ٹی وی رکھنے اور دیکھنے کا شرعی حکم(106528-No)

سوال: مفتی صاحب ! کیا گھرمیں ٹی وی رکھنا اور دیکھنا جائز ہے؟ کیا موجوده دور میں ٹی وی کا استعمال جائز ہے؟

جواب: ٹی وی میں عموما بے حیائی اور لہو لعب کی چیزیں دکھائی جاتی ہے، مثلا : ناچ گانے کے پروگرام، نامحرم عورتوں کی تصاویر اور فحش پروگرام وغیرہ، لہذا منکرات پر مشتمل ہونے کی وجہ سے ٹی وی کو دیکھنا اور گھر میں رکھنا شرعاً ناجائز ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل :

کذا فی تکملة فتح الملھم :

أما التلفزیون والفیدیو، فلا شک فی حرمة استعمالہما بالنظر إلی ما یشتملان علیہ من المنکرات الکثیرة، من الخلاعة والمجون، والکشف عن النساء المتبرجات أو العاریات، وما إلی ذلک من أسباب الفسوق․

(تکملہٴ فتح الملہم، ج: 4، ص : 142، ط: داراحیاء التراث العربی)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 541
Ghar mein TV rakhne or dekhne Ka sharai hukum, Rule of keeping or watching TV in home

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Prohibited & Lawful Things

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.