عنوان: سرخاب پرندہ کھانے کا حکم(106661-No)

سوال: میں نے سرخاب کے بارے میں کافی سنا ہے، اور اردو محاورے میں بھی اس کا استعمال ہوتا ہے، جیسے کہتے ہیں کہ فلاں شخص کو سرخاب کے پر لگ گئے ہیں، آپ سے سوال یہ ہے کیا سرخاب پرندہ کھانا جائز ہے؟

جواب: واضح رہے کہ سرخاب جسے عربی میں "حبارٰی" کہتے ہیں، اس کا شمار حلال پرندوں میں ہوتا ہے، لہذا اس کا کھانا جائز ہے، اور سنن ابی داؤد کی روایت میں حضور ﷺ سے سرخاب پرندہ کا گوشت کھانا بھی ثابت ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی سنن ابی داؤد:

حدثنا الفضل بن سهل، حدثنا إبراهيم بن عبد الرحمن ابن مهدي، حدثني بريه بن عمر بن سفينة، عن أبيه، عن جده، قال: «أكلت مع رسول الله صلى الله عليه وسلم لحم حبارى»

(ج: 3، ص: 354، ط: المکتبۃ العصریۃ)

وفی بذل المجہود:

و لحم الحبارى مجمع على حله لا أرى فيه خلافاً

(ج: 11، ص: 522)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 355
surkhaab parinda khnay ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Halaal & Haram In Eatables

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.