عنوان: ننگے سر کھانا کھانے کا شرعی حکم(107575-No)

سوال: مفتی صاحب! ننگے سر کھانا کھانے کا شرعی حکم بتادیں۔ جزاک اللہ

جواب: ننگے سر کھانا کھانا خلاف ادب ہے، لیکن اگر کوئی ننگے سر کھانا کھاتا ہے، تو اسے گناہ نہیں ہوگا۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کذا فی الفتاوی الھندیۃ :

اﻷﻛﻞ ﻋﻠﻰ اﻟﻄﺮﻳﻖ ﻣﻜﺮﻭﻩ، ﻭﻻ ﺑﺄﺱ ﺑﺎﻷﻛﻞ ﻣﻜﺸﻮﻑ اﻟﺮﺃﺱ، ﻭﻫﻮ اﻟﻤﺨﺘﺎﺭ، ﻛﺬا ﻓﻲ اﻟﺨﻼﺻﺔ۔

(الباب الحادی عشر فی الکراھۃ فی الاکل، ج : 5، ص : 337، ط : دار الفکر)

کذا فی فتاوی امداد السائلین: (جلد ششم، ص :98)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 254
nangay sar khan khanay ka shar'ee hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Halaal & Haram In Eatables

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.