عنوان: ہندو کی ہاتھ کی بنی ہوئی مٹھائی اور دیگر کھانے پینے کی چیزیں کھانا کیسا ہے؟(107644-No)

سوال: میرے علاقہ میں ہندو مٹھائی اور دیگر کھانے پینے کی چیزیں بناکر فروخت کرتے ہیں، سوال یہ ہے کہ ان کے ہاتھ کی بنی ہوئی مٹھائی اور دیگر کھانے پینے کی چیزیں کھانا کیسا ہے؟

جواب: اگر اس میں کوئی نجس چیز نہ ملائی جاتی ہو، نیز بنانے والے کے ہاتھ میں کوئی ناپاک یا حرام چیز نہ لگی ہو، تو ان کے ہاتھ کی بنی ہوئی مٹھائی اور دیگر کھانے پینے کی اشیاء کھانا جائز ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی الھندیۃ:

ولا بأس بطعام المجوس كله إلا الذبيحة، فإن ذبيحتهم حرام ولم يذكر محمد - رحمه الله تعالى - الأكل مع المجوسي ومع غيره من أهل الشرك أنه هل يحل أم لا وحكي عن الحاكم الإمام عبد الرحمن الكاتب أنه إن ابتلي به المسلم مرة أو مرتين فلا بأس به وأما الدوام عليه فيكره كذا في المحيط.

(ج: 5، ص: 347، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 279
hindo ki hath ki bani hoi mithai or deegar khanay pinay ki cheezon ka khana kaisa hai?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Halaal & Haram In Eatables

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.