عنوان: نماز میں پیشانی سے مٹی جھاڑنے کا حکم(107761-No)

سوال: ہماری مسجد میں گرمیوں کے زمانہ میں قالین اٹھا لیے جاتے ہیں اور ہم زمین پر سجدہ کرتے ہیں، تو ہماری پیشانی پر مٹی لگ جاتی ہے، کیا ہم نماز کی حالت میں پیشانی پر لگی مٹی جھاڑ سکتے ہیں؟

جواب: واضح رہے کہ کسی شخص کی پیشانی پر نماز کی حالت میں مٹی لگ جائے اور اس مٹی کو نہ جھاڑنے کی صورت میں اگر کوئی حرج نہ ہو اور نماز سے توجہ نہ ہٹتی ہو، تو اس مٹی کو نماز کی حالت میں پیشانی سے جھاڑنا مکروہ ہے، اور اگر ان دونوں صورتوں میں سے کوئی صورت پائی جاتی ہو، تو پھر جھاڑنا مکروہ نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الھندیۃ:

ولا بأس بأن يمسح جبهته من التراب والحشيش بعد الفراغ من الصلاة وقبله إذا كان يضره ذلك ويشغله عن الصلاة وإذا كان لا يضره ذلك يكره في وسط الصلاة

(ج: 1، ص: 105، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 37

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com