عنوان: نماز کے تشہد میں شہادت کی انگلی اٹھانے کے بعد ہلانے کا حکم(107779-No)

سوال: نماز کے تشہد میں شہادت کی انگلی اٹھانے کے بعد ہلاتے رہنے کا کیا حکم ہے؟

جواب: واضح رہے کہ نماز میں سکون اور وقار مطلوب ہے اور چونکہ نماز کے تشہد میں شہادت کی انگلی اٹھانے کے بعد مستقل ہلاتے رہنا، یہ سکون اور وقار کے خلاف ہے، اس لئے نماز میں یہ عمل مکروہ کہلائے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی سنن أبی داؤد:

عن عبداﷲ بن الزبیر انہ ذکر ان النبی ﷺ کان یشیر باصبعہ اذا دعا ولایحرکھا۔

(باب الإشارة في التشهد، ج: 1، ص: 260، ط: المكتبة العصرية)

وفی اعلاء السنن:

قال الطحطاوی فی حاشیتہ علی مراقی الفلاح: قولہ، وتسن الاشارۃ، أی من غیرتحریک فانہ مکروہ عندنا۔

(ج: 3، ص: 112)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 33

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com