عنوان: کیا نسوار کو جیب میں رکھ کر نماز پڑھ سکتے ہیں؟(107802-No)

سوال: اگر کوئی شخص نسوار کو جیب میں رکھ کر نماز پڑھے، تو کیا نماز ہوجائے گی، کیونکہ میرا دوست کہتا ہے کہ نسوار کو جیب میں رکھ کر نماز پڑھی جائے، تو نماز درست نہیں ہوتی؟

جواب: واضح رہے کہ نسوار ایک تمباکو ہے، جس میں بدبو ہوتی ہے، اور جس طرح بدبو دار چیز کو استعمال کرکے مسجد میں آنا منع ہے، اسی طرح اُس چیز کو مسجد میں لانا بھی منع ہے، تاہم اگر نسوار کو جیب میں رکھ کر نماز پڑھی گئی، تو نماز کسی درجہ میں مکروہ ہوگی، البتہ نماز ادا ہوجائے گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الدر المختار مع رد المحتار:

(الاصل الاباحۃ أو التوقف)۔۔۔۔ قلت فیفھم منہ حکم النباتات الذی شاع فی زماننا المسمی بالتتن فتنبہ وقد کرھہ شیخنا العمادی فی ھدیتہ الحاقالہ بالثوم والبصل بالاولی فتدبر۔

فقول الشارح الحاقالہ بالثوم والبصل فیہ نظر اذ لایناسب کلام العمادی نعم الحاقہ بما ذکر ھو الانصاف قال ابو السعود فتکون الکراھۃ تتزیھۃ والمکروہ تنزیھا یجامع الاباحۃ وقال ط۔ ویوخذ منہ کراھۃ التحریم فی المسجد للنھی الوارد فی الثوم والبصل و ھو ملحق بھما۔

(ج: 6، ص: 460، ط: دار الفکر)

کذا فی فتاویٰ دار العلوم دیوبند:

(رقم الفتوی: 279-194/sd-331439)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 243

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com