عنوان: اذان کے بعد وسیلہ کی دعا میں "والدرجۃ الرفیعۃ" اور "وارزقنا شفاعتہ یوم القیامۃ" پڑھنا کیسا ہے؟(107870-No)

سوال: میں نے بعض حضرات کو دیکھا ہے کہ وہ اذان کے بعد وسیلہ کی دعا میں "والدرجۃ الرفیعۃ" اور "وارزقنا شفاعتہ یوم القیامۃ" کا اضافہ کرکے پڑھتے ہیں، اس بارے میں کیا حکم ہے، کیا یہ اضافہ کرنا درست ہے؟

جواب: واضح رہے کہ امام بخاری رحمہ اللہ نے اذان کے بعد کی وسیلہ کی دعا کو ان الفاظ کے ساتھ نقل فرمایا ہے: "اللّٰهُمَّ رَبَّ هٰذِهِ الدَّعْوَةِ التَّامَّةِ وَالصَّلَاةِ الْقَائِمَةِ آتِ مُحَمَّداً الْوَسِيلَةَ وَالْفَضِيلَةَ وَابْعَثْهُ مَقَامًا مَحْمُوداً الَّذِي وَعَدتَّه" اور امام بیہقی رحمہ اللہ نے اپنی کتاب السنن الکبری میں مذکورہ دعا کو ’’انک لا تخلف المیعاد‘‘ کے اضافہ کے ساتھ قوی سند سے نقل کیا ہے۔

البتہ اس دعا میں لفظِ "وَالْفَضِيلَةَ" کے بعد "والدرجۃ الرفیعۃ" اور "وَابْعَثْهُ مَقَامًا مَحْمُوداً الَّذِي وَعَدتَّه" کے بعد "وارزقنا شفاعتہ یوم القیامۃ" کے الفاظ کا اضافہ کرنے (جیسا کہ عوام الناس میں مشہور ہے) کی محدثین کے قول کے مطابق کوئی اصل موجود نہیں ہے۔

تاہم اگر کوئی شخص مذکورہ اضافی الفاظ کو دعائے وسیلہ کا جزء قرار نہ دے اور ویسے ہی ان الفاظ کو پڑھ لے، تو اس کی گنجائش ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی الصحیح للبخاری:

حدثنا علی بن عیاش قال حدثنا شعیب بن ابی حمزۃ عن محمد بن المنکدر عن جابر بن عبداللہ ان رسول اﷲ ﷺ قال من قال حین یسمع النداء ’’اللھم رب ھذہ الدعوۃ التامۃ والصلوۃ القائمۃ ات محمدان الوسیلۃ والفضیلۃ وابعثہ مقاما محمودن الذی وعدتہ حلت لہ شفاعتی یوم القیامۃ۔

(ج: 1، ص: 86)

وفی الموضوعات الکبری:

حدیث ’’الدرجۃ الرفیعۃ‘‘ فیما یقال بعد الاذان من الدعاء قال السخاوی لم أرہ فی شیٔ من الروایات۔

(ص: 122)

وفی عمدۃ القاری:

وفی روایۃ البیھقی (الذی وعدتہ انک لاتخلف المیعاد)

(ج: 5، ص: 123)

وفی الشامیۃ:

وروی البخاری وغیرہ من قال حین یسمع النداء ’’اللھم رب ھذہ الدعوۃ التامۃ والصلوۃ القائمۃ آت محمدان الوسیلۃ و الفضیلۃ و ابعثہ مقاما محمودان الذی وعدتہ حلت لہ شفاعتی یوم القیامۃ‘‘ وزاد البیھقی فی آخرہ ’’انک لا تخلف المیعاد‘‘ وتمامہ فی الامداد والفتح، قال ابن حجر فی شرح المنھاج وزیادۃ والدرجۃ الرفیعۃ وختمہ بیا ارحم الراحمین لا أصل لھما۔

(ج: 1، ص: 398، ط: دار الفکر)

کذا فی نجم الفتاوی:

(ج:2، ص:275)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 260
azan kay baad wasilay ki duamai "والدرجۃ الرفیعۃ" اور "وارزقنا شفاعتہ یوم القیامۃ" parhna kaisa hai

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Azkaar & Supplications

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.