عنوان: کیا اقامت اور جماعت کے درمیان وقفہ کرسکتے ہیں؟(108578-No)

سوال: اقامت ہوجانے کے بعد جماعت کھڑی کرنے میں کتنا وقفہ کرسکتے ہیں یا پھر اسی وقت جماعت کھڑی کرنا ضروری ہے؟

جواب: اقامت ہوجانے کے بعد جماعت کھڑی کرنے میں تاخیر نہیں کرنی چاہیے، بلکہ فقہاء نے لکھا ہے کہ اگر اقامت اور نماز کے درمیان طویل فاصلہ ہوجائے، تو اقامت باطل ہو جائے گی۔
اسی طرح اگر اقامت کے بعد دوسرا کام شروع کردیا، جو نماز کی قسم سے نہیں ہے، جیسے کھانا پینا وغیرہ، تو اس صورت میں بھی اقامت باطل ہو جائے گی، اور دونوں صورتوں میں اقامت دوبارہ کہی جائے گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
الدلائل:

الدر المختار مع رد المحتار: (400/1،ط:دار الفکر)
الاقامۃ۔۔۔۔وينبغي إن طال الفصل أو وجد ما يعد قاطعا كأكل أن تعاد.

(قوله: وينبغي إلخ)۔۔۔۔أن تكرارها غير مشروع إذا لم يقطعها قاطع من كلام كثير أو عمل كثير مما يقطع المجلس في سجدة التلاوة اهـ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com