عنوان: سجدے میں دونوں پاؤں ملانے کا حکم(108593-No)

سوال: کیا سجدے کی حالت میں دونوں پاؤں کا ملاکر رکھنا صحیح ہے؟

جواب: صحیح قول کے مطابق سجدہ میں دونوں پاؤں ملانا مسنون نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
الدلائل:

الصحیح البخاری: (109/1)
عن ابی یعفور قال سمعت مصعب بن سعد صلیت الی جنب أبی فطبقت بین کفی ثم وضعتھما بین فخذی فنھانی ابی وقال کنا نفعلہٗ فنھینا عنہ وامرنا ان نضع ایدینا علی الرکب۔

مصنف ابن أبی شیبۃ: (110/2)
عن ابی عبیدۃ قال: خرج عبداﷲ من دارہ الی المسجد واذا رجل یصلی صافاً بین قدمیہ فقال عبداﷲ اماھذا فقد اخطأ السنۃ ولو راوح بین قدمیہ کان احبّ إلی۔

حاشیۃ بذل المجہود: (376/4 بیروت)
ذکر الشامي إلصاق الکعبین في الرکوع والسجود سنۃ، لکن ردہ في الفتاوی السعدیۃ۔


تقریرات الرافعی: (61/1)
(قول الشارح ویسن ان یلصق کعبیہ) قال الشیخ ابو الحسن السندی الصغیر فی تعلیقتہ علی الدر ھذہ السنۃ انما ذکرھا من ذکرھا من المتأخرین تبعاً للمجتبیٰ ولیس لھا ذکر فی الکتب المتقدمۃ کالھدایۃ وشروحھا و کان بعض مشایخنا یری أنھا من اوھام صاحب المجتبیٰ ولم ترد فی السنۃ علی ماوقفنا علیہ وکأنھم توھموا ذالک مما ورد أن الصحابۃ کانوا یھتمون بسدّ الخلل فی الصفوف حتی یضمون الکعاب والمناکب ولا یخفی ان المرادھنا الصاق کعبہٖ بکعب صاحبہٖ لاکعبہ مع کعبہ الاخر۔قلت ولعل الشیخ أبا الحسن لحظ الی الآثارالواردۃ فی ان التراوح بین القدمین فی الصلٰوۃ مطلقا افضل من الصاقھما اھـ۔

نجم الفتاوی: (ج2، ص175)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 139

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com