عنوان: نماز کا وقت داخل ہونے کی اطلاع دینے کے لیے اذان کے کلمات کو بطورِ الارم (Alarm) لگانا (9892-No)

سوال: موبائل میں نماز کا وقت داخل ہوتے ہی App کے ذریعے اذان میں سے صرف "اللہ اکبر اللہ اکبر" کی آواز آتی ہے اور پھر بند ہوجاتی ہے۔ کیا موبائل میں اس طرح کا الارم لگانا جائز ہے؟

جواب: واضح رہے کہ اذان شعائر اسلام میں سے ہے، جس کا احترام اور عظمت ہر حال میں لازم ہے، جبکہ موبائل فون میں نماز کا وقت داخل ہونے کی اطلاع دینے کے لیے اذان کے کلمات کو بطورِ الارم استعمال کرنا اذان کی تعظیم کے منافی عمل ہے۔ اسی طرح بعض اوقات موبائل فون کو اچانک اٹھانے کی صورت میں کلمات اذان درمیان سے کٹ جاتے ہیں، جس سے ان مقدس کلمات کی بے ادبی لازم آتی ہے اور بسا اوقات انسان ایسی جگہ (مثلاً: بیت الخلا وغیرہ میں) ہوتا ہے کہ اس دوران نماز کا وقت داخل ہوتے ہی اذان کے کلمات کی آواز موبائل سے آنے لگتی ہے، جس سے ان مقدس کلمات کی سخت بے ادبی اور بے حرمتی لازم آتی ہے، لہذا مذکورہ بالا خرابیوں کی وجہ سے اذان کے کلمات کو بطورِ الارم استعمال کرنے سے اجتناب کرنا چاہیے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم: (الحج، الآية: 32)
ذَلِكَ وَمَنْ يُعَظِّمْ شَعَائِرَ اللَّهِ فَإِنَّهَا مِنْ تَقْوَى الْقُلُوبِ ... الخ

الدر المختار مع رد المحتار: (431/6، ط: سعید)
وقد كرهوا والله أعلم ونحوه … لإعلام ختم الدرس حين يقرر.
(قوله والله أعلم) مفعول كرهوا، وأسكن الميم للوزن أو على حكاية الوقف (قوله ونحوه) بالنصب عطفا على محل ” الله أعلم ” كأن يقول وصلى الله على محمد (قوله لإعلام ختم الدرس) أما إذا لم يكن إعلاما بانتهائه لا يكره، لأنه ذكر فيه وتفويض بخلاف الأول، فإنه استعمله آلة للإعلام ونحوه إذا قال الداخل: يا الله مثلا ليعلم الجلاس بمجيئه ليهيئوا له محلا، ويوقروه وإذا قال الحارس: لا إله إلا الله ونحوه ليعلم باستيقاظه، فلم يكن المقصود الذكر أما إذا اجتمع القصدان يعتبر الغالب كما اعتبر في نظائره اه ط".

واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب
دارالإفتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 660 Oct 24, 2022
namaz ka waqt dakhil hone ki itela / itila dene k liye azan k kalmat ko batore alarm / alaram lagana

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Prohibited & Lawful Things

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.