بیماری کی وجہ سے گناہوں کی مغفرت
(باشتراک املا و دارالافتاءالاخلاص)

بیماری کی وجہ سےگناہوں کی مغفرت
حضرت ابو ہریرہ‏ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے مروی ہے کہ سرکار دوعالم ﷺ نے ارشاد فرمایا:اللہ تعالیٰ اپنے بندے کو بیماری دے کر آزماتے ہیں ،حتیٰ کی (ان بیماریوں کی وجہ سے)اس کے سارے گناہوں کو معاف فرمادیتے ہیں۔
(مستدرک ِحاکم، حدیث نمبر: 1286 )

اسی طرح ایک اور حدیث میں ہے،سرکارِ دو عالم ﷺنے ارشاد فرمایا:’’جس مسلما ن کو بیماری کی وجہ سےیا اس کے علاوہ کسی اور وجہ سے تکلیف پہنچتی ہے،تو اللہ تعالیٰ اس کے ذریعےاس کے گناہوں کواس طرح دور کردیتے ہیں ، جس طرح (موسم ِ خزاں میں) درخت اپنے پتے جھاڑتا ہے ‘‘۔
(صحیح مسلم، حدیث نمبر: 2571 )

لہٰذا مریض کو چاہیے کہ بیماری کی حالت میں صبر و شکر سے کام لے، ناشکری اور بے صبری کا مظاہرہ نہ کرے،تاکہ اللہ تعالیٰ اس بیماری کی وجہ سے اس کے گناہ معاف فرمادیں ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

المستدرك على الصحيحين للحاكم: (رقم الحدیث: 1286، 498/1، ط: دار الكتب العلمية)
عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، قَالَ: سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ: «إِنَّ اللَّهَ لَيَبْتَلِي عَبْدَهُ بِالسَّقَمِ حَتَّى يُكَفِّرَ ذَلِكَ عَنْهُ كُلَّ ذَنْبٍ» هَذَا حَدِيثٌ صَحِيحٌ عَلَى شَرْطِ الشَّيْخَيْنِ، وَلَمْ يُخَرِّجَاهُ "

صحيح مسلم: (رقم الحدیث: 2571، 1991/4، ط: دار إحياء التراث العربي)
فَقَالَ رَسُولُ اللهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: «أَجَلْ إِنِّي أُوعَكُ كَمَا يُوعَكُ رَجُلَانِ مِنْكُمْ» قَالَ: فَقُلْتُ: ذَلِكَ أَنَّ لَكَ أَجْرَيْنِ، فَقَالَ رَسُولُ اللهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: «أَجَلْ» ثُمَّ قَالَ رَسُولُ اللهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: «مَا مِنْ مُسْلِمٍ يُصِيبُهُ أَذًى مِنْ مَرَضٍ، فَمَا سِوَاهُ إِلَّا حَطَّ اللهُ بِهِ سَيِّئَاتِهِ، كَمَا تَحُطُّ الشَّجَرَةُ وَرَقَهَا»

Print Views: 276

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.