عنوان: ضامن اور سنییل نام رکھنا (10890-No)

سوال: ضامن اور سُنییل نام رکھنا کیسا ہے؟ اور اس کا مطلب بھی بتادیں۔ جزاک اللہ

جواب: ۱) لفظ "ضامِنْ" (ضاد زبر، میم زیر، نون ساکن) کا معنی ہے ’’ذمہ یا ضمانت لینے والا‘‘، اس معنیٰ کے اعتبار سے لڑکے کا یہ نام رکھنا درست ہے۔
۲) "سُنَییّل" اس لفظ کا معنی تلاش کے باوجود نہیں مل سکا، اس کے بجائے کوئی بامعنیٰ نام رکھ لیا جائے یا پھر حضراتِ انبیاء کرام یا صحابہ کرام کے ناموں میں سے کوئی نام رکھ لیا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

المصباح المنير: (188/1، ط: المکتبة العصریة)
ضَمِنْتُ: المال وبه "ضَمَانًا" فأنا "ضَامِنٌ" و"ضَمِينٌ" التزمته۔

الصحاح تاج اللغة وصحاح العربية: (2155/6، ط: دار العلم)
[ ضمن ] ضمنت الشئ ضمانا: كفلت به، فأنا ضامن وضمين۔۔۔ وكل شئ جعلته في وعاء فقد ضمنته إياه.

والله تعالىٰ أعلم بالصواب ‏
دارالإفتاء الإخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 505 Aug 15, 2023
zamin or suneel / suniel / sneil naam rakhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Islamic Names

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.