عنوان: "اذہان" یا "ازیان" نام رکھنے کی شرعی حیثیت (10969-No)

سوال: کیا لڑکے کا "اذہان" یا "ازیان" نام رکھنا جائز ہے؟

جواب: "اَذْہان" (ہمزہ پر زبر اور ذال پر جزم) عربی لفظ "ذہن" کی جمع ہے، جس کا معنی ہے "سمجھنا"، اور "ازیان" (ہمزہ پر زبر اور زاء پر جزم) عربی لفظ "زین" کی جمع ہے جس کا معنیٰ ہے : "زینت، آراستگی"۔
معنی کے اعتبار سے یہ دونوں نام رکھنا جائز ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القاموس المحیط: (1199/1، ط: مؤسسة الرسالة)
الذهن، بالكسر: الفهم، والعقل، وحفظ القلب، والفطنة، ويحرك، والقوة، والشحم
ج: أذهان۔

ایضاً: (1204/1، ط: مؤسسة الرسالة)
الزَین :ضد الشین ج:ازیان۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 769 Aug 30, 2023
" azhan" ya azyan" naam rakhne / rakhney ki shari / sharee haisiat

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Islamic Names

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.