عنوان: صبح یا شام میں سے کس وقت سورہ کہف پڑھنے کی فضیلت حاصل ہوگی؟(11025-No)

سوال: حدیث مبارکہ میں ہے جس کا مفہوم یہ ہے کہ:"سورہ کہف کی اول و آخر دس دس آیات پڑھنے والا دجال کے فتنہ سے محفوظ رہے گا"۔ اس ضمن میں دریافت طلب مسئلہ یہ ہے کہ یہ اول و آخر دس دس آیات چوبیس گھنٹے میں صرف صبح کے معمولات میں پڑھنی ہیں یا صبح و شام پڑھنی ہیں؟

جواب: سورہ کہف جمعہ کی رات یا پھر جمعہ کے دن پڑھنی چاہیے اور جمعہ کا دن سورج غروب ہونے کے وقت ختم ہوجاتا ہے تو اس بنا پر سورہ کہف پڑھنے کا وقت جمعرات والے دن سورج غروب ہونے سے لے کر جمعہ والے دن سورج غروب ہونے تک ہوگا اور صبح یا شام کسی بھی وقت پڑھنے سے یہ فضیلت حاصل ہوجائے گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

التنوير شرح الجامع الصغير: (رقم الحديث: 8913، 335/10، ط: مكتبة دار السلام)
(من قرأ سورة الكهف يوم الجمعة) قال الحافظ ابن حجر: وقع في رواية: يوم الجمعة، وفي روايات: "ليلة الجمعة" والجمع بينهما بأن المراد: اليوم بليلته والليلة بيومها.

فيض القدير للمناوي: (198/6، ط: المكتبة التجارية الكبرى)
فيندب قراءتها يوم الجمعة وكذا ليلتها كما نص عليه الشافعي رضي الله عنه.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 374 Sep 11, 2023

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Azkaar & Supplications

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.