عنوان: آئینہ دیکھنے سے وضو ٹوٹنے کا حکم(11215-No)

سوال: واش بیسن کے سامنے لگے ہوئے آئینے میں اپنی شبہیہ پر نظر پڑنے سے وضو مکمل ہوگا یا وضو دوبارہ کسی اور جگہ کرنا ہوگا؟

جواب: واضح رہے کہ آئینہ دیکھنا ان چیزوں میں سے نہیں ہے، جن کی وجہ سے وضو ٹوٹ جاتا ہے، بلکہ یہ لوگوں کا اپنا بنایا ہوا ایک خود ساختہ مسئلہ ہے کہ آئینہ دیکھنے سے وضو ٹوٹ جاتا ہے، شریعت میں اس کی کوئی اصل نہیں ہے، لہذا واش بیسن کے سامنے لگے ہوئے آئینے میں اپنی شبیہ دیکھنے سے وضو پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، بشرطیکہ وضو کو توڑنے والی کوئی اور چیز نہ پائی جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

مختصر القدوري: (ص: 12، ط: دار الكتب العلمية)

والمعاني الناقضة للوضوء: كل ما خرج من السبيلين والدم والقيح والصديد إذا خرج من البدن فتجاوز إلى موضع يلحقه حكم التطهير والقيء إذا كان ملء الفم والنوم مضطجعا أو متكئا أو مستندا إلى شيء لو أزيل عنه لسقط والغلبة على العقل بالإغماء والجنون والقهقهة في كل صلاة ذات ركوع وسجود.

واللّٰه تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 311 Oct 18, 2023
aina dekhne se wazu tootne ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Purity & Impurity

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.