عنوان: ایک ہی معاملے کے لئے صاحبِ معاملہ کے علاوہ دو مختلف افراد کا استخارہ کرنا اور دونوں کو مختلف خواب آنا(12307-No)

سوال: میرے شوہر کو قطر سے نوکری کی آفر آئی ہے، میں نے استخارہ کیا تو دیکھا کہ ایک آدمی مجھ سے زبردستی زنا کررہا ہے، میں اس کی شرمگاہ دیکھتی ہوں اور میں نے یہ دعا کی تھی کہ اگر میرے اور میرے شوہر کے حق میں ان کا جانا بہتر ہو تو جائے، البتہ سسر صاحب نے استخارہ کے بعد ہریالی دیکھی ہے، اب ہم کیا کریں اور کس کے استخارے پر عمل کریں؟

جواب: استخارہ ایک مسنون عمل ہے، استخارے میں سنت یہ ہے کہ صاحبِ معاملہ خود استخارہ کرے، دوسروں سے استخارہ کروانا مسنون نہیں ہے۔ استخارہ درحقیقت ایک دعا ہے، جس کا مقصود یہ ہے کہ بندہ استخارہ کے ذریعہ اللہ تعالیٰ سے دعا کر تا ہے کہ میں جو کچھ کروں، اس کے اندر خیر ڈال دے اور جس کام میں میرے لئے خیر نہ ہو، اس سے مجھے دور فرما دیجئے، استخارہ کا مقصد یہ ہرگز نہیں ہے کہ ہمیں پتہ چل جائے کہ یہ کام ہمارے لئے خیر ہے یا شر۔ پوچھی گئی صورت میں آپ کے شوہر کو چاہیے کہ خود مسنون طریقہ کے مطابق استخارہ کرکے اپنے قلب کے اطمینان کے مطابق عمل کرے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

صحيح البخاري: (رقم الحديث: 6382، 81/8، ط: دار طوق النجاة)
عن جابر رضي الله عنه قال: كان النبي صلى الله عليه وسلم يعلمنا الاستخارة في الأمور كلها، كالسورة من القرآن: " إذا هم بالأمر فليركع ركعتين ثم يقول: اللهم إني أستخيرك بعلمك، وأستقدرك بقدرتك، وأسألك من فضلك العظيم، فإنك تقدر ولا أقدر، وتعلم ولا أعلم، وأنت علام الغيوب، اللهم إن كنت تعلم أن هذا الأمر خير لي في ديني ومعاشي وعاقبة أمري - أو قال: في عاجل أمري وآجله - فاقدره لي، وإن كنت تعلم أن هذا الأمر شر لي في ديني ومعاشي وعاقبة أمري - أو قال: في عاجل أمري وآجله - فاصرفه عني واصرفني عنه، واقدر لي الخير حيث كان، ثم رضني به، ويسمي حاجته.

الموسوعة الفقهية الكويتية: (246/3، ط: وزارة الأوقاف و الشئون الإسلامية)
النيابة في الاستخارة :
21۔ الاستخارة للغير قال بجوازها المالكية، والشافعية أخذا من قوله صلى الله عليه وسلم من استطاع منكم أن ينفع أخاه فلينفعه. وجعله الحطاب من المالكية محل نظر . فقال : هل ورد أن الإنسان يستخير لغيره ؟ لم أقف في ذلك على شيء، ورأيت بعض المشايخ يفعله . ولم يتعرض لذلك الحنابلة، والحنفية۔

واللّٰه تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 112 Nov 13, 2023
aik he mamla ke liye sahibe mamla k elawa 2 mukhtalif afrad ka estekhara karna or dono ko mukhtalif khwab aana

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Azkaar & Supplications

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.