عنوان: کیا باپ اپنے شیر خوار بچہ کا جھوٹا پی سکتا ہے؟ (101307-No)

سوال: میرا آٹھ ماہ کا شیر خوار بیٹا ہے، جو کبھی گلاس سے دودھ یا پانی پی کر بچا دیتا ہے، تو میں بچا ہوا پی لیتا ہوں، لیکن میرے ایک عزیز کہتے ہیں کہ باپ اپنے شیر خوار بیٹا (جو اپنی ماں کا دودھ پیتا ہے) کا جھوٹا پی نہیں سکتا ہے، سوال یہ ہے کہ کیا باپ اپنے شیر خوار بیٹے کا جھوٹا پی سکتا ہے یا نہیں پی سکتا ہے؟

جواب: واضح رہے کہ باپ کے لیے اپنے شیر خوار بیٹے کے جھوٹا پینے میں کوئی مضائقہ نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی العنایۃ شرح الھدایۃ:

والرضاع بفتح الراء وهو الأصل وبكسرها وهو لغة فيه مص اللبن من الثدي. وفي الشريعة عبارة عن مص شخص مخصوص، وهو أن يكون صبيا رضيعا من ثدي مخصوص وهو ثدي الآدمية في وقت مخصوص۔

(ج: 3، ص: 438، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 502
kiya maa baap apnay sheir khuwaar bachay ka jhoota pee saktay hain

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Fosterage

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com