عنوان: چاند نام رکھنا(13388-No)

سوال: مفتی صاحب! کسی نے پوچھا ہے کہ لڑکے کا نام "چاند" رکھنا کیسا ہے؟

جواب: لڑکے کا نام "چاند" رکھنا جائز ہے، لیکن بہتر یہ ہے کہ اس کے بجائے انبیاء کرام علیھم السلام یا صحابہ کرام رضوان اللہ علیھم اجمعین کے ناموں میں سے کوئی نام یا عربی زبان کے اچھے معانی والے ناموں میں سے کوئی نام رکھ لیا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

كنز العمال: (رقم الحديث: 45228، ط: مؤسسة الرسالة)
أول ما ‌ينحل الرجل ولده اسمه ‌فليحسن أسمه. "أبو الشيخ في الثواب -عن أبي هريرة"».

فیروز اللغات: (ص: 539، ط: فیروز سننز)
چاند (نون غنہ) (ہ۔ا۔مذ) قمر۔ ماہ تاب۔ ماہ۔ مہ۔ چندرماں۔ زمین کا طفیلی سیارچہ (2) ڈھال کا آہنی یا برنجی پھول (3) ایک زیور جو ہلال نما ہوتا ہے
(4) جانوروں کی پیشانی کا سفید بڑا ٹیکا
(5) تاج (6) چاند کی شکل جو رومال پر بناتے ہیں (7) وہ گول نشان جو چاند ماری کے واسطے لگایا جاتا ہے
(8) مہینے کا آخری دن (9) (ار ا۔ مث) کھوپڑی۔ چندریا

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 240 Dec 05, 2023
chand naam rakhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Islamic Names

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.