عنوان: ووٹ کی سیاہی لگے ہونے کی صورت میں وضو کا حکم (14669-No)

سوال: مفتی صاحب! معلوم یہ کرنا ہے کہ ووٹ ڈالنے کے بعد جو سیاہی انگھوٹے کے اوپر لگائی جاتی ہے جو کافی دیر سے ہٹتی ہے۔ کیا اس کے ہوتے ہوئے وضو ہو جاتا ہے؟

جواب: واضح رہے کہ ووٹ ڈالنے سے پہلے انگوٹھے پر لگائی جانے والی سیاہی کھال تک پانی پہنچنے میں رکاوٹ نہیں بنتی ہے، لہذا اس سیاہی کے لگے ہونے کی صورت میں بھی وضوہوجاتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الفتاوی الھندیة: (42/1، ط: دارالفکر)

وإن كانت شيئاً لا يزول أثره إلا بمشقة بأن يحتاج في إزالته إلى شيء آخر سوى الماء كالصابون لا يكلف بإزالته. هكذا في التبيين . وكذا لا يكلف بالماء المغلي بالنار. هكذا في السراج الوهاج. وعلى هذا قالوا: لو صبغ ثوبه أو يده بصبغ أو حناء نجسين فغسل إلى أن صفا الماء يطهر مع قيام اللون. كذا في فتح القدير.

واللہ تعالی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 615 Feb 09, 2024
vote ki siyahi lage hone ki soorat mein wazu ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Purity & Impurity

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.