عنوان: "مُحَمَّد مَشْہُوْد" نام رکھنا (15766-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! محمد مشہود نام کا کیا مطلب ہے اور کیا یہ نام رکھ سکتے ہیں؟

جواب: "مَشْہُوْد" (میم کے زبر، شین کے جزم، ہا پر پیش اور واؤ کے جزم کے ساتھ) عربی زبان کا لفظ ہے، جس کا معنی ہے "لائقِ ذکر"، اس معنی کے اعتبار سے بچے کا نام "مُحَمَّد مَشْہُوْد" رکھنا درست ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

مسند البزار: (رقم الحدیث: 8540، 176/15، ط: مكتبة العلوم و الحكم)
عَن أبي هُرَيرة؛ أَنَّ رَسُولَ اللهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيه وَسَلَّم قال: "إن من حق الولد على الوالد أن يحسن اسمه ويحسن أدبه".

القاموس الوحید: (ص: 894، ط: ادرہ اسلامیات)
المشہود: لائقِ ذکر۔

واللّٰه تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 198 Feb 28, 2024
"muhammad mashod" naam rakhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Islamic Names

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.