عنوان: کیا ولیمہ کے لئے ہمبستری شرط ہے؟ (1659-No)

سوال: سوال یہ ہے کہ کیا ولیمہ سے پہلے بیوی سے ہم بستری کرنا شرط ہے، یا بغیر ہمبستری کے بھی ولیمہ کیا جاسکتا ہے؟

جواب: ولیمہ کی دعوت کرنے سے پہلے بیوی سے ہمبستری کرنا شرط نہیں ہے، میاں بیوی کی آپس میں خلوت (تنہائی) ہونے کے بعد ہمبستری سے پہلے بھی ولیمہ کی دعوت کی جاسکتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

اعلاء السنن: (باب استحباب الولیمۃ، 12/11، ط: ادارۃ القرآن)
"والمنقول من فعل النبي صلی الله علیه وسلم أنها بعد الدخول، کأنه یشیر إلی قصة زینب بنت جحش، وقد ترجم علیه البیهقي بعد الدخول، وحدیث أنس في هذا الباب صریح في أنها الولیمة بعد الدخول".

مرقاۃ المفاتیح: (2104/21، ط: دار الفکر)
(أولم ولو بشاة) : أي: اتخذ وليمة، قال ابن الملك: تمسك بظاهره من ذهب إلى إيجابها والأكثر على أن الأمر للندب، قيل: إنها تكون بعد الدخول، وقيل: عند العقد، وقيل: عندهما واستحب أصحاب مالك أن تكون سبعة أيام والمختار أنه على قدر حال الزوج (متفق عليه)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1082 Jun 14, 2019
kia valima kay liye hambistari shart hai?, Is sex / sexuality a condition / compulsory for valima / walima?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.