عنوان: غیر مسلم کو قربانی کا گوشت دینا(101804-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب ! قربانی کا گوشت کسی اسماعیلی دوست کو دیا جا سکتا ہے اگر وہ مطالبہ کرے؟ اور اس کے علاوہ غریب غیر مسلم جو عید کے دن گھر گھر مانگنے آتے ہیں، ان کو دینے کا کیا حکم ہے؟ برائے مہربانی رہنمائی فرما دیجئے۔ جزاک اللہ

جواب: غیر مسلم کو قربانی کا گوشت دینا جائز ہے، البتہ غریب مسلمانوں کو دینے کا ثواب زیادہ ہے، اس لیے قربانی کا گوشت مسلمانوں  کو دینے کی کوشش کرنی چاہیے، البتہ اگر کوئی مصلحت ہو، تو غیر مسلم کو بھی قربانی کا گوشت دیا جا سکتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الهندية: (300/5)

"ويستحب أن يأكل من أضحيته ويطعم منها غيره، والأفضل أن يتصدق بالثلث، ويتخذ الثلث ضيافةً لأقاربه وأصدقائه، ويدخر الثلث، ويطعم الغني والفقير جميعاً، كذا في البدائع. ويهب منها ما شاء للغني والفقير والمسلم والذمي، كذا في الغياثية".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 276
ghair muslim ko qurbani ka gasht dena, Giving sacrificial meat to non-Muslims

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Qurbani & Aqeeqa

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.