عنوان: میت کو غسل دینے کے بعد پوسٹ مارٹم کیا گیا، کیا اس کے بعد دوبارہ غسل دیا جائے گا؟(101866-No)

سوال: مردے کو ایک دفعہ غسل دینے کے بعد پوسٹ مارٹم کیا گیا تو اب دوبارہ غسل دیا جائے گا یا نھیں؟

جواب:

واضح رہے کہ پوسٹ مارٹم میں انسان کی سخت بے حرمتی اور بے حجابی پائی جاتی ہے، اس لیے شریعت نے عام حالات میں اس کی اجازت نہیں دی ہے، لہذا اس سے اجتناب کرنا چاہیے۔
بہرکیف! ایک مرتبہ میت کو مسنون طریقے سے غسل دینے کے بعد دوبارہ غسل دینا واجب نہیں ہے، لہذا غسل کے بعد اگر جسم کے کسی حصے سے خون وغیرہ نکلے، تو اسے روئی یا کپڑے کے ذریعے بند کر دیا جائے۔

لماوفی الہندیۃ:
"والواجب ہو الغسل مرۃ واحدۃ… فان خرج منہ شیٔ غسلہ ولا یعید غسلہ ولا وضوءہ ثم ینشفہ بثوب کیلا تبتل اکفانہ".
(الفتاویٰ العالمکیریۃ: ۱/ ۱۵۸، الفصل الثانی فی الغسل)

وفی الدر المختار مع رد المحتار:
"و لا بأس بجعل القطن علی وجھہ و فی مخارقہ کدبر و قبل و اذن و فم".
(الدر المختار مع الشامی: ١/ ۸۵۳)

و فی الدر المختار:
"ولا یعاد غسلہ و لا وضؤہ بالخارج منہ".
(الدر المختار : ۲/ ۱۹۷،طبع:ایچ ایم سعید)

میت و جنازہ میں مزید فتاوی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Funeral & Jinaza

23 Jan 2020
جمعرات 23 جنوری - 27 جمادى الاول 1441

Copyright © AlIkhalsonline 2019. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com