عنوان: بغیر لائیسنس کے گاڑی چلاتے ہوئےحادثہ کی صورت میں موت کا حکم(102048-No)

سوال: السلام علیکم، اگر کوئی شخص بائیک چلاتا ہے، لیکن اس کے پاس لائیسنس نہیں ہے،اگر اس کا ایکسیڈنٹ میں انتقال ہو جائے تو کیا وہ خود کشی کے حکم میں ہوگا؟

جواب: اگر کوئی شخص  گاڑی چلانے کی مطلوبہ اہلیت رکھتا ہو، مگر لائیسنس نہیں بنوایا ہو تو حادثہ میں انتقال کرجانے کو خودکشی تو نہیں کہا جاسکتا ہے، البتہ یہ ملکی قانون کی خلاف ورزی ہے اور شرعاً حکومت کے اس طرح کے قوانین کا پاس ولحاظ کرنا واجب ہے، اور ان کی خلاف ورزی ناجائز اور ممنوع ہے۔

لمافی الایة:
وَلَا تُلْقُوْا بِاَیْدِیْکُمْ اِلَی التَّہْلُکَۃِ ۔ [البقرہ:۱۹۵]
وفی تکملۃ فتح الملہم:
إن المسلم یجب علیہ أن یطیع أمیرہ في الأمور المباحۃ،فإن أمر الأمیر بفعل مباح وجبت مباشرتہ، وإن نہیٰ عن أمر مباح حرام إرتکابہ۔۔۔۔۔، ومن ہنا صرح الفقہاء بأن طاعۃ الإمام فیما لیس بمعصیۃ واجبۃ۔( باب وجوب طاعۃ الأمراء: ج:3، ص:268،ط:دار احیاء التراث العربی)

میت و جنازہ میں مزید فتاوی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Funeral & Jinaza

23 Jan 2020
جمعرات 23 جنوری - 27 جمادى الاول 1441

Copyright © AlIkhalsonline 2019. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com