عنوان: عیدی دینے کا حکم(2486-No)

سوال: سوال یہ ہے کہ عیدی تقسیم کرنا شرعاً کیسا ہے؟

جواب: عید کے دنوں میں "عیدی" کو اسلامی عبادت یا سنت سمجھے بغیر محض اپنی خوشی سے بچوں، ماتحتوں اور ملازموں کو ہدیہ کے طور پر دینا جائز ہے۔حضرت امام اعظم ابوحنیفہ ؒکے استاد حضرت حمادؒ عید کے دن پانچ سو افراد کو ایک ایک سو درہم عنایت فرماتے تھے۔
واضح رہے کہ اگر کوئی کسی کی خوشی اورمرضی کے بغیر زبردستی عیدی لے یا کسی کو اس نیت سےعیدی دے کہ اس سے اس کے بدلے دگنا وصول کروں گا تو یہ دونوں صورتیں جائز نہیں ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم: (الروم، الآیۃ: 39)
وَ مَاۤ اٰتَیْتُمْ مِّنْ رِّبًا لِّیَرْبُوَا۠ فِیْۤ اَمْوَالِ النَّاسِ فَلَا یَرْبُوْا عِنْدَ اللّٰہِ ۚ وَ مَاۤ اٰتَیْتُمْ مِّنْ زَکٰوۃٍ تُرِیْدُوْنَ وَجْہَ اللّٰہِ فَاُولٰٓئِکَ ہُمُ الْمُضْعِفُوْنَo

مسند أحمد: (72/5، رقم الحدیث: 2946)
عن أبي حرۃ الرقاشي عن عمہ قال: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: ألا لا تظلموا، ألا لا یحل مال امرأ إلا بطیب نفس منہ۔

سیر اعلام النبلاء: (234/5، الطبقة الثالثة)
وقال احمد ابن عبداللہ العجلی: کان افقہ اصحاب ابراہیم، وکانت ربما تعتریہ موتة وھو یحدث۔ وبلغنا: ان حمادا کان ذا دنیا متسعة، وانہ کان یفطر فی شھر رمضان خمس مائة انسان، وانہ کان یعطیھم بعد العید لکل واحد مائة درھم۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2137 Nov 13, 2019
eidi dena kesa he / hey?, What is Eid like?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Bida'At & Customs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.