عنوان: مہر ادا نہ کرنے والے شخص کا حکم(2537-No)

سوال: مفتی صاحب ! السلام علیکم، اگر کوئی شخص بیوی کو مہر نہ دے تو اس کے لیے حدیث میں کیا وعید ہے؟

جواب: جو آدمی کسی عورت سے نکاح کرے اور اس کی مہر ادا کرنے کی نیت نہ ہو، تو قیامت کے دن ایسا شخص اللہ کے نزدیک زنا کرنے والا شمار ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

مصنف ابن ابی شیبہ: (360/4)
"قال النبي صلى الله عليه وسلم: من نكح امرأةً وهو يريد أن يذهب بمهرها فهو عند الله زان يوم القيامة".

ترجمہ:
جو شخص کسی عورت سے نکاح کرے اور مہر ادا کرنے کی نیت نہ رکھتاہو وہ اللہ کے نزدیک زانی ہے۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2630 Nov 16, 2019
meher ada na karne / karney wale / waley shaks ka hukum, Ruling on a person who does not pay dowry / meher

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.