عنوان: عورت کا عدت کے دوران نکاح کرنا(2635-No)

سوال: عورت کا طلاق کے بعد عدت پوری کیے بغیر کسی دوسرے مرد سے نکاح کرنا کیسا ہے؟ شرعی حکم بیان کریں جزاک اللہ

جواب: واضح رہے کہ عدت پوری کیے بغیر کسی دوسرے مرد سے نکاح کرنا جائز نہیں ہے، لہذا اگر کسی نے عدت میں نکاح کر لیا، تو وہ نکاح منعقد نہیں ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (باب العدہ، 482/2)
نکاح منکوحۃ الغیر و معتدتہ الخ لم یقل احد بجوازہ فلم ینعقد اصلا۔

الھندیہ: (کتاب النکاح، 262/2)
ولا یجوز للرجل ان یتزوج زوجۃ غیرہ و کذا المعتدۃ کذا فی السراج الوھاج۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2825 Nov 25, 2019
orat ka idat ke / key doran nikah karna, Marrying a woman during 'iddah

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.