عنوان: سوتیلی ماں کی بیٹی سے نکاح کا حکم(2935-No)

سوال: السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ،
مفتی صاحب ! سوال کا مدلل جواب مطلوب ہے۔ ایک مرد کی بیوی وفات پاگئی اور اس کی اولاد موجود تھی، اس نے ایک بیوہ سے شادی کی، اس بیوہ کی بھی اولاد تھی۔ کیا ان کی پہلے سے موجود اولاد آپس میں شادی کر سکتے ہیں ؟
جزاک اللہ خیرا

جواب: سوال میں ذکر کردہ صورت میں سوتیلی اولادوں کا آپس میں نکاح جائز ہے، کیونکہ ان دونوں اولادوں میں حرمت نکاح کی کوئی وجہ نہیں پائی جاتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الدر المختار: (31/3)
"أما بنت زوجۃ أبیہ أو ابنہ فحلال".

البحر الرائق: (فصل في المحرمات)
"قالوا: ولا بأس أن یتزوج الرجل امرأۃ ویتزوج ابنہ أمہا أو بنتہا؛ لأنہ لامانع، وقد تزوج محمد بن الحنفیۃ امرأۃ وزوج ابنہ بنتہا".

واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2318 Dec 17, 2019
soteli maa ki beti se nikah ka hukum / hukm, Ruling on marriage with stepmother's daughter

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.