عنوان: عصر سے مغرب تک روزے کی شرعی حیثیت(3140-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! بعض لوگ عصر کی اذان سے مغرب کی اذان تک روزہ رکھتے ہیں، اور اس دوران کھانے پینے سے بچتے ہیں، کیا ان کا یہ فعل شریعت کے مطابق ہے؟

جواب: واضح رہے کہ شرعی روزہ صبح صادق سے مغرب تک ہوتا ہے، لہذا عصر سے مغرب تک روزے کی شرعاً کوئی حیثیت نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

صحیح البخاري: (باب إذا اصطلحوا علی صلح جور فالصلح مردود، رقم الحدیث: 2697)
عن عائشۃ رضي اللّٰہ تعالیٰ عنہا قالت: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: من أحدث في أمرنا ہٰذا ما لیس منہ فہو رد۔

الدر المختار مع رد المحتار: (330/3، ط: زکریا)
وہو إمساک عن المفطرات حقیقۃً أو حکمًا في وقت مخصوص، وہو الیوم من شخص مخصوص مع النیۃ۔
وفي الشامیۃ قولہ: وہو الیوم، أي الیوم الشرعي من طلوع الفجر إلی الغروب۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1277 Jan 04, 2020
Asar say maghrib tak rozay ki sharai haisiyat, haisiat, roze, Asr, se, Legal status of fasting from Asr to Maghrib, Asar to Maghreb

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sawm (Fasting)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.