عنوان: معتکف کا مسجد کے اندر سر منڈوانا اور خط بنانا(103145-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب، اگر کوئی معتکف مسنون اعتکاف میں مسجد کے اندر سر منڈوائے یا اپنا خط بنائے، تو کیا یہ جائز ہے یا نہیں؟

جواب: واضح رہے کہ معتکف کا مسجد میں سر منڈوانا یا خط بنانا جائز ہے، البتہ نیچے کپڑا بچھا لیا جائے، تاکہ مسجد میں بال وغیرہ نہ گرجائیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی الھندیہ:

سئل ابو حنیفہ عن المعتکف اذا احتاج الی الفصد و الحجامۃ ھل یخرج فقال لا۔

(کتاب الخطر والا باحۃ، الباب الخامس، ج: ۶، ص: ۲۱۵)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Print Full Screen Views: 335
Moatakif ka masjid kay andar sar mundwana aur khat banana, Motakif, main, Dauran e aitekaf, masjid mein, kia dauran-e-aitekaf, Shaving the head and making beard inside the mosque by Moatakif, Shaving head in masjid, Shaving in masjid

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Aitikaf

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.