عنوان: عورت کی پچھلی شرمگاہ میں ہمبستری کرنا(3680-No)

سوال: بیوی کو پیدائشی نقص ہے، جس میں اس کا فرج کا سوراخ موجود نہیں، کیا ایسی صورت میں بیوی کے دبر میں جماع جائز ہے؟

جواب: واضح رہے کہ کسی بھی صورت میں عورت کی پچھلی شرمگاہ میں جماع کرنا حرام ہے، نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے ایسا کام کرنے والے پر لعنت کی ہے، اور فرمایا: "ایسا شخص ملعون ہے، جو عورت کی پچھلی شرمگاہ میں جماع کرتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم: (البقرہ، الایۃ: 223)
نساوٴکم حرث لکم فأتوا حرثکم أنی شئتم۔۔۔۔الخ

مشکوۃ المصابیح: (باب المباشرۃ، رقم الحدیث: 3191، 208/3، ط: مکتبۃ البشری)
عن ابن عباس قال: اوحی الی روسول اللہ ﷺ (نساؤکم حرث لکم فاتوا حرثکم) الایۃ: اقبل وادبر واتق الدبر والحیضۃ۔

و فیھا ایضا: (باب المباشرۃ، رقم الحدیث: 3193، 208/3، ط: مکتبۃ البشری)
عن ابی ہریرۃ قال: قال رسول اللہ ﷺ ملعون من اتی امراتہ فی دبرھا۔

سنن الترمذی: (باب ما جاء فی کراھیۃ اتیان النساء فی ادبارھن، رقم الحدیث 1166، 306/3، ط: دار الحدیث)
عن ابن عباس قال: قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ”لا ینظر اللہ إلی رجل أتی رجلاً أو امرأة في دبرھا“

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1877 Mar 04, 2020
Aurat, Awrat, ki, pichle, pechle, pichlee, sharamgaah, sharmgaah, sharmgah, mein, humbistri, humbistari, karna, Having intercourse in a woman's posterior genitals, anal sex, Having sex from back of woman

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.