عنوان: مرحوم کے ایصال ثواب کے لیے کھانے پر فاتحہ پڑھنا(4062-No)

سوال: کیا مرحومین کے ایصال ثواب کے لیے کھانے پر فاتحہ پڑھنا جائز ہے؟

جواب: واضح رہے کہ مرحوم کے ایصال ثواب کیلئے کھانے وغیرہ پر مروّجہ طریقہ پرفاتحہ پڑھنا بدعت ہے، شریعت میں اس کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔ اگر میت کو ثواب پہنچانا ہو تو اس کا صحیح طریقہ یہ ہے کہ کسی خاص ہیئت اور کیفیت کا التزام کیے بغیر نفل نماز پڑھ کر، روزے رکھ کر، قرآن پاک پڑھ کر، صدقہ کرکے یا کوئی نیک عمل کرکے اس کا ثواب میت کو پہنچایا جا سکتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

مراقی الفلاح: (ص: 621- 622)

فللإنسان أن یجعل ثواب عملہ لغیرہ عند أہل السنة والجماعة، صلاةً کان أو صوماً أو حجاً صدقةً أو قرآء ةً للقرآن أو الأذکار أو غیر ذٰلک من أنواع البر، ویصل ذٰلک إلی المیت وینفعہ۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1688 Apr 18, 2020
marhoom / marhom / marhum key / kay / ke esaal e swaab / esal e swab / isaal e swaab kelie / keylye / keylie khane / khaney par fatiha / fatihaa parhna / parhnaa, Recitation of Fatiha on food for the reward / esaal e swaab of the deceased

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Bida'At & Customs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.