عنوان: گرمی کی وجہ سے مسجد کی چھت پر جماعت کروانا (104177-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! جیسا کہ آج کل گرمی کا موسم ہے، اور مساجد میں تراویح کے دوران مقتدی کافی پریشانی کا شکار ہوتے ہیں، تو کیا اس صورت میں مسجد کی چھت پر عشاء اور تراویح کی جماعت کروائی جاسکتی ہے؟

جواب: گرمی کی وجہ سے مسجد کے اندرونی حصے اور مسجد کے صحن کو چھوڑ کر چھت پر عشاء اور تراویح وغیرہ کی جماعت کروانا مکروہ ہے، ہاں مسجد کے اندرونی حصے اور صحن میں جگہ خالی نہ ہونے کی وجہ سے مجبوری میں چھت پر نماز پڑھنا بلا کراہت جائز ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کذا فی الشامیۃ:

ثم رأیت القہستاني نقلاً عن المفید کراہۃ الصعود علی سطح المسجد، ویلزمہ کراہۃ الصلاۃ أیضا فوقہ۔
(شامي ۲؍۴۲۸ زکریا)

کذا فی الھندیۃ:

والصعود علی سطح کل مسجد مکروہ، ولہذا إذا اشتد الحر یکرہ أن یصلوا بالجماعۃ فوقہ إلا إذا ضاق المسجد، فحینئذ لا یکرہ الصعود علی سطحہ للضرورۃ۔

(الفتاوی الہندیۃ ۱؍۳۲۳)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 856
garmi ki waja / vaja se / say / sey masjid / masajid / mosque ki chat / chatt per jamat / jamaat karwana / karvana

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Taraweeh Prayers

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.