عنوان: روزے کی حالت میں تیراکی کرنا (4243-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! کیا روزے کی حالت میں سوئمنگ پول میں نہانا صحیح ہے؟ اس سے روزے پر تو کوئی اثر نہیں پڑے گا؟

جواب: روزے کی حالت میں سوئمنگ پول یا نہر وغیرہ میں غوطہ لگانے سے روزہ نہیں ٹوٹتا، بشرطیکہ پانی منہ یا ناک کے راستے سے حلق سے نیچے نہ اترے، ورنہ روزہ ٹوٹ جائے گا اور قضا لازم ہوگی، جو شخص تیراکی اچھی طرح نہ جانتا ہو، اس کے لیے روزے کی حالت میں پانی میں غوطہ لگانا مناسب نہیں ہے، کیونکہ پانی حلق کے راستے اندر جانے کا اندیشہ ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الدر المختار مع رد المحتار: (401/2، ط: سعید)

وان افطرخطاً؛کأن تمضمض فسبقہ الماء…
(قولہ وإن أفطر خطأ) شرط جوابہ قولہ الآتی قضی فقط…… والمراد بالمخطیٔ من فسد صومہ بفعلہ المقصود دون قصد الفساد۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1811 May 01, 2020
rozay ki halat mai tairaaki karna, Swimming while / in the state of fasting

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sawm (Fasting)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.