عنوان: روزہ میں مسواک اور ٹوتھ پیسٹ کرنے کا حکم (4244-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! روزے دار کا مسواک استعمال کرنا کیسا ہے؟ اور روزے کی حالت میں ٹوتھ پیسٹ استعمال کرنا کیسا ہے؟

جواب: روزہ دار کے لیے روزے کے دوران مسواک کرنا جائز ہے، خواہ سوکھی مسواک ہو یا تازہ، اگرچہ مسواک کا کڑوا پن یا اس کا تیز ذائقہ منہ میں محسوس ہوتا ہو، تو اس سے بھی روزہ پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، اور روزہ مکروہ بھی نہیں ہوگا۔
روزے کی حالت میں ٹوتھ پیسٹ استعمال کرنا حلق میں اثرات جانے کے شک کی وجہ سے مکروہ ہے، اگر حلق میں ٹوتھ پیسٹ چلا گیا، تو روزہ فاسد ہوجائے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الھندیة: (الباب الثالث فیما یکرہ للصائم و ما لایکرہ، 199/1، ط: زکریا)

کرہ ذوق شئ ومضغہ بلاعذر کذا في الکنزومن العذر في الأول مالوکان زوج المرأۃ وسید ہا سیئ الخق فذاقت المرقۃ ومن العذر۔ في الثاني: أن لاتجد من یضغ الطعام لصبیہا من حائض أونفساء أو غیرہما ممن لایصوم ولم تجد طبیخا ولالبنا حلیبا۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2105 May 01, 2020
rozay ki halat main / mai miswaak or toothpaste karne ka hukum, Ruling on brushing teeth and doing miswak during fasting

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sawm (Fasting)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.