عنوان: کسی عورت کے خاص مقام پر ہاتھ لگانے سے حرمتِ مصاہرت کا حکم (4944-No)

سوال: اگر کوئی شخص کسی عورت کے خاص مقام پر شہوت کے ساتھ ہاتھ لگائے، اور بوس و کنار نہ کرے اور نہ ہی زنا کرے، تو کیا اس شخص کے لیے اس عورت کی بیٹی سے نکاح کرنا جائز ہے؟

جواب: اگر کوئی شخص کسی عورت کے خاص مقام پر شہوت کے ساتھ ہاتھ لگا لے، تو اس سے حرمتِ مصاہرت ثابت ہوجاتی ہے، اور مذکورہ شخص پر اس عورت کی بیٹی ہمیشہ کے لئے حرام ہوجاتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الدر المختار: (32/3، ط: دار الفکر)

(و) حرم أيضا بالصهرية (أصل مزنيته) أراد بالزنا في الوطء الحرام (و) أصل (ممسوسته بشهوة) ولو لشعر على الرأس بحائل لا يمنع الحرارة۔۔الخ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1104 Jul 28, 2020
kisi orat kay khaas maqam par hath laganay say hurmat musaharat ka hukum, Ruling / order of hurmat-e-musahirat by touching a woman's special place

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.