عنوان: شادی کے موقع پر عمدہ لباس اور سونے کے زیورات پہننا (4955-No)

سوال: شادی کا موقع خوشی کا موقع ہوتا ہے، ایسے موقع پر لڑکے اور لڑکیاں عمدہ لباس زیب تن کرتے ہیں، اور لڑکیاں سونے کے زیورات پہننے سے بناؤ سنگھار کرتی ہیں، سوال یہ ہے کہ شادی بیاہ میں لڑکوں اور لڑکیوں کے لیے عمدہ لباس پہننے، اور لڑکیوں کے لیے سونے کے زیورات پہننے کی کہاں تک اجازت ہے؟

جواب: شادی کے موقع پر لڑکے اور لڑکیوں کے لئے عمدہ لباس پہننے کی شرعا اجازت ہے، شرط یہ ہے کہ اس میں فخر اور ریا کاری نہ کی جائے، اور اسراف سے بچا جائے، تاہم لڑکیوں کے لیے سونے کے زیورات پہننا جائز ہے، اس میں سونے کی کوئی مقدار مقرر نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (351/6، ط: دار الفکر)
ومباح وهو الثوب الجميل للتزين في الأعياد والجمع ومجامع الناس لا في جميع الأوقات لأنه صلف وخيلاء، وربما يغيظ المحتاجين فالتحرز عنه أولى ومكروه وهو اللبس للتكبر....الخ

و فیہ ایضا: (352/3، ط: دار الفکر)
لا بأس لھن بلبس الدیباج و الحریر و الذھب والفضۃ۔الخ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 632 Jul 28, 2020
shadi kay moqay par umda libaas or soonay kay zeewraat pehenna , Wearing fine clothes and gold ornaments on the occasion of marriage

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.