عنوان: قربانی کے جانور کے سینگ خوبصورتی کیلیے کاٹنے کا شرعی حکم(104958-No)

سوال: مفتی صاحب ! کیا خوبصورتی کے لیے قربانی کے جانور کے سینگ خود کاٹ کر چھوٹے کر سکتے ہیں؟

جواب: واضح رہے کہ قربانی کے جس جانور کے سینگ خوبصورتی کیلیے کاٹ دیے گیے ہو، اور سینگ کاٹنے کا اثر دماغ تک نہ پہنچا ہو، تو ایسے جانور کی قربانی جائز ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

وفی ردالمحتار:

قوله: (ويضحي بالجماء) : هي التي لا قرن لها خلقة، وكذا العظماء التي ذهب بعض قرنها بالكسر أو غيره، فإن بلغ الكسر إلى المخ لم يجز.

(ج 6، ص 323، ط:دارلفکر،بیروت)

کذا فی البحر الرائق:

قولہ : (ﻭﻳﻀﺤﻲ ﺑﺎﻟﺠﻤﺎء) : اﻟﺘﻲ ﻻ ﻗﺮﻥ ﻟﻬﺎ ﻳﻌﻨﻲ ﺧﻠﻘﺔ ﻷﻥ اﻟﻘﺮﻥ ﻻ ﻳﺘﻌﻠﻖ ﺑﻪ ﻣﻘﺼﻮﺩ ﻭﻛﺬا ﻣﻜﺴﻮﺭﺓ اﻟﻘﺮﻥ ﺑﻞ ﺃﻭﻟﻰ.

(ج 8، ص 200، ط:دارالکتاب الاسلامی)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

(مزید سوالات و جوابات کیلئے ملاحظہ فرمائیں)
http://AlikhlasOnline.com

قربانی و عقیقہ میں مزید فتاوی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Qurbani & Aqeeqa

06 Aug 2020
جمعرات 06 اگست - 15 ذو الحجة 1441

Copyright © AlIkhalsonline 2020. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com