عنوان: معتکف کا حجامت بنوانا(105008-No)

سوال: معتکف کیلئے مسجد میں اپنے سر کے بال خود بنانا یا نائی سے بنوانا کیسا ہے؟

جواب: معتکف کےلئے مسجد میں اپنی حجامت خود بنانا جائز ہے، اور اگر نائی سے بنوائے، تو اس میں تفصیل یہ ہے کہ نائی اگر مزدوری کے بغیر کام کرتا ہے، تو اس سے مسجد کے اندر بنوانا جائز ہے اور اگر وہ مزدوری لے کر کام کرتا ہے، تو اس صورت میں معتکف مسجد کے اندر رہے، اور نائی مسجد سے باہر کھڑے ہوکر حجامت بنائے، مسجد کے اندر اجرت لے کر کام کرنا جائز نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی الھندیۃ:

سئل ابو حنیفہ عن المعتکف اذا احتاج الی الفصد و الحجامۃ ھل یخرج فقال لا۔

(فتاوی ھندیۃ، 320/5 کتاب الکراھیۃ ط: رشیدیہ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 180

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Aitikaf

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com